الاربعین فی فضائل النبی الامین

آپ ﷺ کا روزِ قیامت انبیاء علیہم السلام کا امام ہونے کا بیان

فَصْلٌ فِي کَوْنِهِ صلی الله علیه وآله وسلم إِمَامَ الْأَنْبِیَاءِ یَوْمَ الْقِیَامَةِ

آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا روزِ قیامت انبیاء علیہم السلام کا امام ہونے کا بیان

55/1. عَنْ أُبَيِّ بْنِ کَعْبٍ رضی الله عنه عَنِ النَّبِيِّ صلی الله علیه وآله وسلم قَالَ: إِذَا کَانَ یَوْمَ الْقِیَامَةِ کُنْتُ إِمَامَ النَّبِیِّیْنَ، وَخَطِیْبَهُمْ، وَصَاحِبَ شَفَاعَتِهِمْ غَیْرَ فَخْرٍ.

رَوَاهُ التِّرْمِذِيُّ وَابْنُ مَاجَة وَالْحَاکِمُ.وَقَالَ التِّرْمِذِيُّ: هَذَا حَدِیْثٌ حَسَنٌ صَحِیْحٌ. وَقَالَ الْحَاکِمُ:هَذَا حَدِیْثٌ صَحِیْحُ الإِسْنَادِ.

55: أخرجه الترمذي في السنن، کتاب المناقب، باب في فضل النبي صلی الله علیه وآله وسلم، 5/586، الرقم: 3613، وابن ماجه في السنن، کتاب: الزهد، باب ذکر الشفاعة، 2/1443، الرقم: 4314، وأحمد بن حنبل في المسند، 5/137، 138، الرقم: 2128-2129، والحاکم في المستدرک، 1/143، الرقم: 240، 6969، وعبد بن حمید في المسند، 1/90، الرقم: 171، والمقدسی في الأحادیث المختارة، 3/385، الرقم: 1179، والمزي في تهذیب الکمال، 3/118.

’’حضرت ابی بن کعب رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: قیامت کے دن میں انبیاء کرام علیہم السلام کا امام و خطیب اور شفیع ہوں گا اور اس پر (مجھے) فخر نہیں۔‘‘

اس حدیث کوامام ترمذی، ابن ماجہ اور حاکم نے روایت کیا ہے۔ امام ترمذی نے اسے حسن صحیح قرار دیا ہے نیز امام حاکم نے فرمایا کہ اس حدیث کی سند صحیح ہے۔

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved