الاربعین فی فضائل النبی الامین

حضور ﷺ کے خاتم النبیین ہونے کا بیان

فَصْلٌ فِي کَوْنِهِ صلی الله علیه وآله وسلم خَاتَمَ النَّبِّیِّیْنَ

حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے خاتم النبیین ہونے کا بیان

34/1. عَنْ أَبِي هُرَیْرَةَ رضی الله عنه أَنَّ رَسُوْلَ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم قَالَ: إِنَّ مَثَلِي وَمَثَلَ الْأَنْبِیَاءِ مِنْ قَبْلِي، کَمَثَلِ رَجُلٍ بَنَی بَیْتًا فَأَحْسَنَهُ وَأَجْمَلَهُ إِلَّا مَوْضِعَ لَبِنَةٍ مِنْ زَاوِیَةٍ فَجَعَلَ النَّاسُ یَطُوْفُوْنَ بِهِ وَیَعْجَبُوْنَ لَهُ وَیَقُوْلُوْنَ: هَلَّا وُضِعَتْ هَذِهِ اللَّبِنَةُ قَالَ: فَأَنَا اللَّبِنَةُ وَأَنَا خَاتَمُ النَّبِیِّیْنَ.

مُتَّفَقٌ عَلَیْهِ.

أخرجه البخاري في الصحیح، کتاب المناقب، باب خَاتَم النَّبِیِینَ صلی الله علیه وآله وسلم، 3/1300، الرقم: 3341-3342، ومسلم في الصحیح، کتاب الفضائل، باب ذکر کونه صلی الله علیه وآله وسلم خاتم النبین، 4/1791، الرقم: 2286، والنسائی في السنن الکبری، 6/436، الرقم: 11422، وأحمد بن حنبل في المسند، 2/398، الرقم: 9156، وابن حبان في الصحیح، 14/315، الرقم: 6405.

’’حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: میری مثال اور گزشتہ انبیائے کرام کی مثال ایسی ہے، جیسے کسی نے ایک بہت خوبصورت مکان بنایا اور اسے خوب آراستہ کیا، لیکن ایک گوشہ میں ایک اینٹ کی جگہ چھوڑ دی۔ لوگ آکر اس مکان کو دیکھنے لگے اور اس پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہنے لگے: یہاں اینٹ کیوں نہیں رکھی گئی؟ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:سومیں وہی اینٹ ہوں اور میں خاتم النبیین ہوں (یعنی میرے بعد بابِ نبوت ہمیشہ کے لئے بند ہوگیا ہے)۔‘‘

یہ حدیث متفق علیہ ہے۔

35/2. عَنْ جَابِرٍ رضی الله عنه قَالَ: قَالَ رَسُوْلُ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم: فَأَنَا مَوْضِعُ الَّلبِنَةِ جِئْتُ فَخَتَمْتُ الْأَنْبِیَاءَ.

رَوَاهُ مُسْلِمٌ وَأَحْمَدُ.

أخرجه مسلم في الصحیح، کتاب الفضائل، باب ذکر کونه صلی الله علیه وآله وسلم خاتم النَّبِیِّین، 4/1791، الرقم: 2286-2287، والترمذي في السنن، کتاب المناقب عن رسول اﷲ صلی الله علیه وآله وسلم، باب في فضل النبي صلی الله علیه وآله وسلم، 5/586، الرقم: 3613، والنسائی في السنن الکبری، 6/436، الرقم: 11422، وأحمد بن حنبل في المسند، 2/398، الرقم: 9156، 3/361، 5/136، وابن أبي شیبة في المصنف، 6/324، الرقم: 31770، وابن حبان في الصحیح، 14/315، الرقم: 6405، والبیهقي في السنن الکبری، 9/5، وفي شعب الإیمان، 2/178، الرقم: 1484.

’’حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: میں اس اینٹ کی جگہ ہوں، میری آمد سے انبیاء کرام کی آمد کا سلسلہ ختم ہو گیا۔‘‘

اسے امام مسلم اور احمد نے روایت کیا ہے۔

36/3. عَنْ أَبُيِّ ابْنِ کَعْبٍ رضی اللہ عنہ أَنَّ رَسُوْلَ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم قَالَ: وَأَنَا فِي النَّبِیِّیْنَ بِمَوْضِعِ تِلْکَ اللَّبِنَةِ.

رَوَاهُ التِّرْمِذِيُّ وَأَحْمَدُ.

أخرجه الترمذي في السنن، کتاب المناقب، باب في فضل النبي صلی الله علیه وآله وسلم، 5/586، الرقم: 3613، والنسائی في السنن الکبری، 6/436، الرقم: 11422، وأحمد بن حنبل في المسند، 2/398، الرقم: 9156، 3/361، 5/136، وابن أبي شیبة في المصنف، 6/324، الرقم: 31770، وابن حبان في الصحیح، 14/315، الرقم: 6405، والبیهقي في السنن الکبری، 9/5، وفي شعب الإیمان، 2/178، الرقم: 1484.

’’اور حضرت ابی بن کعب رضی اللہ عنہ کی روایت میں ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: اور میں نبیوں میں اس اینٹ کی جگہ ہوں۔‘‘

اسے امام ترمذی اور احمد نے روایت کیا ہے۔

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved