تخلیق کائنات

تفصیلی فہرست

عرضِ مترجم

پیشِ لفظ

باب اوّل۔ ۔ ۔ مُبادیاتِ کائنات

فصل اوّل : حقیقتِ کائنات

1۔ کائنات۔ ۔ ۔ ماضی، حال اور مُستقبل کے آئینے میں

2۔ کائنات کا آغاز

3۔ کائنات کا اِنجام

فصل دُوُم : سِتارے اور کہکشائیں

4۔ ستارے

5۔ کہکشاں

  • بیضوی کہکشاں
  • چکردار کہکشاں
  • بے قاعدہ کہکشاں

6۔ ہماری کہکشاں

7۔ قواسرز

8۔ ثنائی، متکثر اور تغیر پذیر ستارے

  • ثنائی ستارے
  • متکثر ستارے
  • متغیر ستارے

9۔ ستاروں کا اِرتقاء اور سیاہ شگاف

فصل سِوُم : سورج اور نظامِ شمسی

10۔ سورج کی سطح اور فضا

11۔ نظامِ شمسی

12۔ نظامِ شمسی کی پیدائش

13۔ سیارچے

14۔ شہابیئے اور شہابِ ثاقب

15۔ دُمدار تارے

16۔ وقت کا نظام

فصل چہارم : زمین

17۔ زمین سے متعلقہ اَعداد و شمار

18۔ زمین کی ساخت

  • قشرِ ارض
  • کرۂ حجری
  • بیرونی مرکزہ
  • اندرونی مرکزہ

19۔ تشکیلِ ارض کی داستان

20۔ تشکیلِ ارض کے مراحلِ اَربعہ

فصل پنجم : چاند

21۔ اَشکالِ قمر

باب دُوُم۔ ۔ ۔ وُسعت پذیر کائنات

فصل اوّل : وُسعت پذیر کائنات کا قرآنی نظریہ

22۔ تخلیقِ کائنات کا قرآنی نظریہ

23۔ عظیم دھماکے کا نظریہ اور قرآنی اِعلان

24۔ اِبتدائی دھماکے کا قرآنی نظریہ

25۔ نئے مادّے کا عدم سے وُجود میں ظہور اور کُنْ فَیَکُوْنَ

26۔ عظیم دھماکے کے بعد کیا ہوا۔ ۔ ۔ ؟

فصل دُوُم : سورج اور نظامِ شمسی کی تخلیق

27۔ تخلیقِ زمین اور اُس کا فطری اِرتقاء

28۔ نظامِ فطرت اور قرآن

فصل سِوُم : قرآن اور نظریۂ اِضافیت

29۔ اَتَیْنَا طَائِعِیْنَ کے تقاضے

فصل چہارم : سات آسمانوں کی سائنسی تعبیر

30۔ کائنات کے متعلق سات آسمانوں کا تصوّر

31۔ فلکیاتی تہوں کے تناسب میں سات آسمانوں کا ذِکر

32۔ لامتناہی اَبعاد کا تصور

باب سِوُم۔ ۔ ۔ اِرتقائے کائنات

فصل اوّل : اِرتقائے کائنات کے چھ اَدوار

33۔ قرآن کا تصوّرِ یوم

34۔ تخلیق کے دو مراحل

  • مرحلۂ ماقبلِ ظہورِ حیات

35۔ مراحلِ تخلیقِ ارض

  • مرحلۂ مابعدِ ظہورِ حیات

فصل دُوُم : ڈارون کا مفروضۂ اِرتقائے حیات

36۔ ڈارونی اِرتقاء کا غیرسائنسی افسانہ

37۔ نظریۂ اِرتقاء کا کھوکھلا پن

  • خلیوں کی مَن گھڑت اَقسام
  • اِرتقاء کا عمل سُست رَو ہے۔ ۔ ۔ ؟
  • جینیاتی عمل ہمیشہ تخریبی ہوتا ہے
  • علمی دھوکہ دہی کی ننگی داستان
  • اپنڈکس ہرگز غیر ضروری نہیں
  • کوئی مخلوق ترقی یافتہ نہیں
  • بقائے اَصلح کی حقیقت

1۔ اندھی مچھلی کی مِثال

2۔ اندھے سانپ کی مِثال

3۔ آسٹریلوی خارپُشت کی مِثال

  • اَصناف کا تنوّع
  • سائنسی علوم کی عدمِ قبولیّت

1۔ طبیعیات کی مِثال

2۔ ریاضی کی مِثال

3۔ حیاتیات کی مِثال

باب چہارم۔ ۔ ۔ اِنعقادِ قیامت

فصل اوّل : سیاہ شگاف کا نظریہ (کائنات کا ثِقلی تصادُم)

38۔ سیاہ شگاف کا تعارُف

39۔ سیاہ شگاف کا معرضِ وُجود میں آنا

40۔ سیاہ شگاف سے روشنی بھی فرار نہیں ہو سکتی

41۔ سیاہ شگاف بیرونی نظارے سے مکمل طور پر پوشیدہ ہوتے ہیں

42۔ زمین آخرکار سورج سے جا ٹکرائے گی

43۔ موجودہ سیاہ شگافوں کی تِعداد اور جسامت

44۔ سیاہ شگاف۔ ۔ ۔ ایک ناقابلِ دید تنگ گزرگاہ

فصل دُوُم : کائنات کے تجاذبی اِنہدام کا قریبی جائزہ

45۔ کائنات کے تجاذبی اِنہدام کا قرآنی نظریہ

46۔ کائنات کے لپیٹے جانے کی سائنسی تفسیر

47۔ عظیم آخری تباہی اور نئی کائنات کا ظہور

48۔ کائنات دوبارہ گیسی حالت اِختیار کر لے گی

49۔ تمام کائنات عظیم ناقابلِ دید سیاہ شگاف بن جائے گی

50۔ پیغامِ حق

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved